فن و فنکار

آسکر ایوارڈ یافتہ فلم ساز پر ریپ کا الزام

French Actress Valentine Monnier Accuses Roman Polanski of Rape

فرانس کی سابق اداکارہ ویلنٹائن مونیئر نے مشہور فلمساز رومن پولانسکی پر 1970 میں جنسی تشدد اور ریپ کرنے کا الزام عائد کردیا۔

ویلنٹائن مونیئر نے کئی سال قبل اداکاری کو خیرباد کہہ دیا تھا اور اب وہ فوٹوگرافر کے طور پر کام کررہی ہیں۔

بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق ویلنٹائن مونیئر نے رومن پولانسکی پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ فلم ساز نے انہیں 1975 میں اپنے بنگلے میں ریپ اور جنسی تشدد کا نشانہ بنایا، اس وقت وہ صرف 18 برس کی تھی۔

اداکارہ ویلنٹائن مونیئر — فوٹو/ اسکرین شاٹ
اداکارہ ویلنٹائن مونیئر — فوٹو/ اسکرین شاٹ

اپنے کھلے خط میں سابق اداکارہ نے لکھا کہ رومن نے انہیں زبردستی ایک دوا کھلانے کی کوشش کی اور جنسی تشدد بھی کیا، اس کے کچھ دیر بعد ہی آنسو بہاتے ہوئے معافی مانگی اور وعدہ لیا کہ وہ کبھی کسی کو اس واقعے کے بارے میں نہیں بتائیں۔

انہوں نے مزید لکھا کہ ‘مجھے لگا میں شاید مرنے والی ہوں’۔

ویلنٹائن نے مزید بتایا کہ ‘وہ مجھے اس وقت تک مارتے رہے جب تک میں ہمت نہ ہار گئی، اس کے بعد انہوں نے میرا ریپ کیا’۔

دوسری جانب 86 سالہ فلم ساز رومن پولانسکی نے ان تمام الزامات کو بےبنیاد ٹھہراتے ہوئے سابق اداکارہ کے خلاف مقدمہ دائر کرنے کی دھمکی دے دی۔

آسکر ایوارڈ یافتہ فلم ساز کے وکیل کے مطابق رومن ریپ کے ان الزامات پر سخت ترین ایکشن لے گیں۔

رومن پولانسکی پر 1978 میں ایک تیرہ سالہ لڑکی سے غیر قانونی جنسی تعلق قائم کرنےکا الزام بھی عائد کیا گیا تھا لیکن وہ سزا سنائے جانے سے قبل ہی امریکہ چھوڑ کر فرانس چلے گئے تھے۔

یاد رہے کہ رواں ماہ فرانسیسی اداکارہ اڈیل ہینیل نے بھی می ٹو مہم کا حصہ بنتے ہوئے نامور ہدایت کار کرسٹوف روجیا پر نوجوانی میں جنسی ہراساں کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے پوری فرانس کی فلمی دنیا کو حیران کردیا۔

اس وقت اداکارہ نے کہا تھا کہ ان کے اس انکشاف کے بعد فرانس سے تعلق رکھنے والی مزید اداکارائیں بھی سامنے آکر اپنے ساتھ ہونے والی ناانصافیوں کو دنیا کے سامنے لائیں گی۔

سابق اداکارہ ویلنٹائن مونیئر کا سپورٹ کرتے ہوئے اڈیل ہینیل نے اپنے بیان میں کہا کہ ‘میں ویلنٹائن کا سپورٹ کرتی ہوں اور ہر حال میں ان کا ساتھ دوں گی، وہ سچ کہہ رہی ہیں اور مجھے ان پر یقین ہے، چاہتے سامنے والا کتنا بھی طاقتور کیوں نہ ہو سچ کی جیت ہوگی’۔

Junaid

Committed individual adept in efficiently utilizing available resources in completing assigned tasks. Seeking an entry-level position as a fresh graduate of English Literature & Software Engineering, providing a high end administrative duty for the company.

Related Articles

Leave a Reply

Back to top button