اسلامتحقیقات

حضرت محمد رسول اللہ ﷺ کے دور اور خلفاء راشدین، ملکہ وکٹوریہ کے دور میں نادر سکے

حضرت محمد رسول اللہ ﷺ کے دور اور خلفاء راشدین ،             ملکہ وکٹوریہ کے دور میں نادر سکے

اجنیانوالہ (نمائندہ وقت J-49) گوجرانوالہ شیخو پورہ روڈ پر واقع آٹھ سو سال سے آباد قدیم قصبہ ارتالی ورکاں میں تین صدیاں دیکھ کر انتقال کرنے والے ولی کامل حافظ الحاج عبدالقادر ؒ کے مکتب میں نبی آخر الزماں حضرت محمد رسول اللہ ﷺ کے دور میں اور خلفاء راشدین مختلف سلطنتوں کے بادشاہوں اور ملکہ وکٹوریہ کے ادوار کے نادر 57سکے اصلی حالت میں موجود ہیں سن 2ھ 3ھ 12ھ 13ھ کے سکوں پر تاجدار ِ مدینہ محمد ﷺ عربی کا کلمہ طیبہ صحابہ اکرام ؓ کی خلافت میں جاری ہونے والے سکوں پر چارو ں خلفائے راشدین کے نام مبارک حضرت ابوبکر صدیق ؓ عمر بن خطاب ؓ عثمان غنی ؓ اور علی المر تضے ؓ کے نام ان رائج الوقت سکوں پر ثبت ہیں حافظ عبد القادر ؒ مرحوم کے بیٹے حافظ خلیل الرحمان نے بتایا کہ ان کے والد حافظ عبد القادر ؒ نے مولوی حافظ محمد عمر ؒ کے گھر میں آنکھ کھولی ۔ ابتدائی تعلیم کے بعد اسی آبائی قصبہ میں میٹرک کا امتحان پاس کیا اور مقامی خاندانی مسجد کا انتظام سنبھال کر درس و تدریس کا کام شروع کر دیا جہاں پر انہوں نے ساری زندگی بچوں اور بڑوں کو قرآن پاک اور احادیث مبارکہ کی تعلیم دیتے رہے اور زندگی کے آخری ایام میں بھی ان کی صحت قابل رشک تھی آپ نے ہمیشہ صحت مند اور سادہ غذا کو پسند فرمایا ۔ حافظ الحاج عبدالقادر کے ساتھ بیٹے اور دو بیٹیں ہیں جن کی اولاد میں سے 35حافظ قرآن ہیں آپ کے مکتب میں موجود اسلامی نادر سکے پشت در پشت چلے آرہے ہیں جو اس وقت گدی نشین حافظ خلیل الرحمان کے پاس موجود ہیں ایسے قدیم سکے دنیا کے کسی میوزیم میں موجود نہیں ہیں آپ ؒ کے ہاتھوں سے تحریر کردہ قرآن پاک کا نایاب نسخہ بھی موجود ہے آ پ ؒ کی درجن سے زائد کتب تفسیر نفیس الامین کے نام سے پنجاب یونیورسٹی میں بطور سلیبس بھی پڑھائی جاتی ہیں اسلامی سکوں کی زیارت کیلئے لوگ دور دراز کے علاقوں سے ہر سال 7فروری کو آپ حضرت حافظ الحاج عبدالقادر کے سالانہ عرس مبارک کے موقع پر مزار شریف ارتالی ورکاں گوجرانوالہ شیخو پورہ روڈ پہنچ کر زیارت سے مستفید ہوتے ہیں ۔

فوٹو گراف
فوٹو گراف

Related Articles

4 Comments

Leave a Reply

Back to top button