شعروشاعری | Urdu Poetry

غزل

rose

میں دیوانہ اس کے پیار میں جانے کیا کیا کر لیتا ہوں
رات کے پچھلے پہر اچانک آنکھ میں آنسو بھر لیتا ہوں
تم نے پوچھا ہجر سمے کا ، میں تم کو بتلاتا ہوں
کبھی تم آکر مجھ کو دیکھو پل پل کیسے مر لیتا ہوں
اک شہزادی چاند نگر کی نیند نگر میں آتی ہے ،تو
اس سے ملنے کی خاطر میں خواب نگر سے پر لیتا ہوں
اس کی یادیں ندی کنارے مجھ کو بدر ستاتی ہیں
سیپی دے کے بچوں سے جب پر لیتا ہوں
سید بدر سعید

Related Articles

Leave a Reply

Check Also
Close
Back to top button