مولویوں کی نماز جنازہ


شہزاد اقبال

سندھ کے سےاسی افق پر گزشتہ ہفتے سے خاصی گھن گرج ہو رہی ہے اور کسی وقت بھی تباہی آ سکتی ہے لےکن (وفاقی وزیر داخلہ کے لندن جانے پر )حالات معمول پر بھی آنے کے امکانات ہےں ،شاےد اس تحرےر کے شائع ہونے تک دونوں امکانی صورتحال میں سے کوئی اےک پوری ہو چکی ہو بہر حال گزشتہ اتوار 6مارچ کو سندھ کے وزیر داخلہ ڈاکٹر ذوالفقار مرزا نے اےک جلسہ مےں ملیر کی امن کمےٹی کو پےپلز پارٹی سے منصوب کر کے نا صرف سب کو حےران کر دیا بلکہ ےہ کہہ کر کہ اگر اس کے ارکان جرائم پےشہ ہےں تو میں بھی ہوں، سےاسی ہلچل کی بنےاد رکھ دی اور متحدہ قومی موومنٹ کی قےادت کو مجبور کر دیا کہ وہ اس حوالے سے رابطہ کمےٹی کا خصوصی اجلاس بلائے اور پھر متحدہ کی طرف سے ےہ بےان سامنے آگیا کہ اس نے سندھ کی حکومت سے الگ ہونے کا فےصلہ کر لیا ہے اس حوالے سے زرداری ےاترا بھی ہوئی احسن ملک کو بھی خصوصی مشن سونپ دیا گےا صدر زرداری نے جہاں اےک ہفتے میں تحفظات دور کرنے کی ےقین دہانی کردی وہےں ’سیاسی ڈائےلاگ کے ماسٹر‘رحمن ملک خصوصی مشن پر لندن پہنچ گئے ہیں جنہیں تادم تحرےر الطاف حسین نے مصروفیت کے باعث وقت نہیں دیا ۔”بد قسمتی “ سے اس بار ذوالفقار مرزا سےاسی ہلچل پےدا کرنے کے بعد نائن زےرو نہیں گئے اور نہ ہی دہی بھلے کھائے لہٰذا تناﺅ کی کےفےت بد ستور قائم ہے ۔متحدہ کے ڈپٹی پارلےمانی لےڈر حےدر رضوی کا کہنا ہے کہ پےپلز پارٹی امن کمےٹی بھتہ خوروں کا ٹولہ ہے تو ذوالفقار مرزا صاحب نے اس کا جواب یوں دیا کہ متحدہ کے کئی لوگوں پر تحفظات تھے ہم نے تو اس پر اعتراض نہیں کےا تا ہم متحدہ وفاقی حکومت کے بعد اس بار سندھ میں بھی خاصی سنجےدہ دکھائی دے رہی ہے ادھر وزےر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ کا کہنا ہے کہ اتحادیوں کےساتھ پےدا ہونے والی غلط فہمیاں جلد ختم ہو جائےںگی اےم کےو اےم کے ساتھ اتحاد کو 3سال ہو چکے ہیں مزےد 2سال بھی پورے ہو جائےں گے، سپےکر نثار کھوڑرو کے بھی ےہی خےالات ہےں دریں اثناءگزشتہ ہفتے کی اےک اور پےش رفت سندھ اسمبلی میں ذوالفقار مرزا کی آمدپر پی پی ارکان اسمبلی کا ان کا شاندار استقبال کرنا تھا اراکین ان کے حق میں نعرے لگاتے رہے کہ” قدم بڑھاﺅ مرزا صاحب ہم تمہارے ساتھ ہےں“ جبکہ متحدہ کے ارکان نے بائےکاٹ کا سلسلہ جاری رکھا ۔سپرےم کورٹ کی جانب سے چےئر مین نیب جسٹس (ر) دےدار حسین شاہ کی تقرری کا لعدم قرار دےئے جانے کے بعد پےپلز پارٹی کے شرےک چےئر مین آصف علی زرداری کی اےماءپر سندھ میں جمعہ کو ہڑتال کی گئی ۔آئےنی ،قانونی و سےاسی حلقوں نے صدر کی جانب سے’ سندھ کارڈ ‘کو استعمال کرنے پر انتہائی تشوےش کا اظہار کےا گیا اور اےک ٹی وی چینل پر شازےہ مری اور مسلم لےگ ن کے اےک رہنما کے درمےان جو تندو تےز جملے سننے کو ملے اس سے سےاست دانوں کی ذہنی و سےاسی ناپختگی کا کھل کر اظہار ہوا اگرچہ پےپلز پارٹی نے دےدار حسین شاہ کو دوبارہ چےئر مین نیب بنانے کا فےصلہ کر لیا ہے تاہم ہڑتال کے نتےجے میں جہاں بسوں اور کارو بار ی مراکز کو نقصان پہنچاےا گیا وہاں 8افراد کی ہلاکت بھی باعث تشوےش ہے سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف سندھ اسمبلی میں پی پی ارکان اپنے بازﺅں پر کالی پٹیاں باندھ کرآئے۔
کراچی میں گزشتہ ہفتے بھی ٹارگٹ کلنگ کے اِکا دُکا واقعات ہو تے رہے جبکہ حےدر آباد میں صوبائی وزےر زبیرا حمد پر فائرنگ کے واقعہ نے سےکورٹی کا پول کھول دیا ہے اور وی آئی پی شخصےات کی سےکورٹی بڑھانے کی ہداےت کر دی گئی ہے ۔کراچی میں گزشتہ ہفتے شہریوں کے ہاتھوں 2ڈاکوﺅں کو تشدد کے ذرےعے ہلاک کرنے کے 2مختلف واقعات بھی عوامی صبر کا پےمانہ لبرےز ہونے کی نشاندہی کرت رہا ہے، ادھر کنگری ہاﺅس کے بادشاہ گر پےر پگاڑا نے اپنے پیشین گوئیاں کا سلسلہ جاری رکھا اورانہوں نے ملاقات کے لئے آئے ہوئے سابق وزےر خارجہ شاہ محمود قرےشی کو آئندہ کا وزےر اعظم قرار دیا ۔لےکن ساتھ میںےہ بھی کہہ دیا کہ اب انتخابات 20سے25سال بعد ہونگے جس میں سب کو ووٹ کا حق نہیں ہو گا ےعنی قرےشی صاحب کے لئے ہنوز دلی دوراست ہے پگاڑا صاحب نے فوجی اسٹےبلشمنٹ کا اےک بار پھر ساتھ دےتے ہوئے کہا کہ فوج اےک منظم جماعت ہے اور آخر میں ےہ کہ مولویوں کی نماز جنازہ ہو گی تو ملک دبئی بنے گا معلوم نہیں ان کے ذہن میں کس قسم کے مولوی اور کس قسم کا دبئی ہے ؟

Related Articles

Leave a Reply

Back to top button